163

ہم جنس پرستوں کو سنگسار کیا جائے گا ۔ طالبان

کابل (ڈیلی پاکستان آن لائن) طالبان کے ایک جج نے اعلان کیا ہے کہ ہم جنس پرستی میں ملوث مردوں کو سنگسار کیا جائے گا۔ جرمن اخبار بِلڈ کو دیے گئے انٹرویو میں طالبان جج عبدالرحیم نے کہا کہ اسلام میں اغلام بازی کی دو سزائیں ہیں۔ ایک تو انہیں سنگسار کیا جائے یعنی انہیں اس وقت تک پتھر مارے جائیں گے جب تک ان کی موت نہ ہوجائے۔ جج عبدالرحیم کے مطابق ہم جنس پرست کیلئے دوسری سزا یہ ہے کہ اس کے اوپر ڈھائی سے تین میٹر بلند دیوار گرادی جائے۔ انہوں نے کہا کہ طالبان کے پورے ملک پر قبضے کی صورت میں شرعی قوانین متعارف کرائے جائیں گے۔ جج عبدالرحیم نے بتایا کہ انہوں نے حال ہی میں ایک انگوٹھی چوری کرنے والے شخص کا ہاتھ کاٹنے کی سزا سنائی تھی۔ ” میں نے گھر کے مالک کو کہا کہ اگر آپ چاہیں تو چور کی ٹانگ بھی کاٹی جاسکتی ہے کیونکہ اس نے نہ صرف انگوٹھی چوری کی ہے بلکہ چادر چار دیواری کا تقدس بھی پامال کیا ہے جو دہرا جرم ہے تاہم گھر کے مالک نے کہا کہ صرف ہاتھ ہی کاٹا جائے۔” جج عبدالرحیم کے مطابق یہ جرم پر منحصر ہے کہ اس کی سزا کس نوعیت کی ہونی چاہیے۔ سزائیں انگلیوں کی پوریں کاٹنے سے شروع ہو کر سنگسار کرنے تک جا سکتی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں