پاکستان نے افغانستان کو پانچ رنز سے شکست دے دی

ایشیا کپ کے سپر فور مرحلے میں پاکستان افغانستان کو ہرا کر فائنل میں پہنچ گیا۔

پاکستان کے کپتان بابر اعظم نے ٹاس جیت کر افغانستان کو پہلے بیٹنگ کی دعوت دی۔

افغانستان نے پاکستان کو جیت کے لیے 130 رنز کا ہدف دیا تھا۔

پہلے اوور کی دوسری ہی گیند پر بابر اعظم آؤٹ ہوگئے، انہوں نے اپنا کھاتہ بھی نہیں کھولا، 18 رنز کے مجموعے پر فخر زمان رن آؤٹ ہوگئے۔

45 رنز پر پاکستان کو محمد رضوان کی صورت میں تیسرا نقصان اٹھانا پڑا، انہوں نے 20 رنز کی اننگز کھیلی۔

افتخار احمد اور شاداب خان نے چوتھی وکٹ کی شراکت میں ہدف کا تعاقب برقرار رکھا، اس دوران شاداب نے جارحانہ انداز اختیار کیا۔ دونوں نے 42 رنز کی شراکت قائم کی۔

87 رنز پر افتخار احمد بڑا شاٹ کھیلنے کی کوشش یں آؤٹ ہوگئے انہوں نے 30 رنز بنائے۔ 97 رنز پر شاداب خان بھی آؤٹ ہوئے وہ 36 رنز بنانے کے بعد پویلین لوٹے۔

پاکستان کو چھٹا نقصان 105 رنز پر محمد نواز کی صورت میں اٹھانا پڑا، وہ صرف 5 رنز ہی بناسکے۔ 109 رنز پر خوشدل شاہ آؤٹ ہوگئے۔

118 رنز پر آصف علی آؤٹ ہوگئے۔ اننگز کے آخری اوور میں پاکستان کو 11 رنز درکار تھے اور اس کی صرف ایک ہی وکٹ باقی تھی، کریز پر نسیم شاہ اور محمد حسنین موجود تھے۔

نسیم شاہ نے لگاتار 2 گیندوں پر 2 چھلکے لگاکر پاکستان کی کشتی پار لگادی۔

افغان کھلاڑی رو پڑے

ایشیا کپ ٹی 20 کے سپر فور مرحلے میں پاکستان کے ہاتھوں سنسنی خیز مقابلے میں شکست کے بعد افغانی کھلاڑی میدان میں رو پڑے۔

افغانستان کی اننگز

افغانستان نے اننگز کا آغاز انتہائی تیز رفتاری سے کیا تھا، افغان اوپنرز چوتھے اوور میں 36 رنز بناچکے تھے، حارث رؤف نے رحمان اللہ گرباز کی وکٹ لے کر رنز کے سیلاب کو روکا، 43 کے اسکور پر محمد حسنین نے حضرت الللہ زازائی کو ٹھکانے لگایا۔

ون ڈاؤن پوزیشن پر آنے والے ابراہیم زردان نے کچھ مزاحمت دکھائی لیکن کوئی کھلاڑی ان کا ساتھ نہ دے سکا۔ابراہیم زردان نے سب سے زیادہ 35 رنز بنائے۔

کریم جنت 15، نجیب اللہ زردان 10 جب کہ محمد نبی صفر پر آؤٹ ہوئے، عظمت اللہ عمر زئیی 10 اور راشد خان 18 رنز بناکر ناٹ آؤٹ رہے۔

افغانستان کی ٹیم 20 اوورز میں 6 وکٹوں کے نقصان پر 129 رنز ہی بناسکی۔

قومی ٹیم

پاکستان نے افغانستان کے خلاف ٹیم میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی۔ ٹیم میں کپتان بابر اعظم، محمد رضوان، فخر زمان، افتخار احمد، خوشدل شاہ، آصف علی، شاداب خان، محمد نواز، حارث رؤف، نسیم شاہ اور محمد حسنین شامل تھے۔

Leave a Comment